جاپانی ہوٹل ریسٹورنٹ میں گاہک کے چہرے پر تھپڑ مارنے کی انوکھی سروس

 

جاپانی ہوٹل ریسٹورنٹ میں گاہک کے چہرے پر تھپڑ مارنے کی انوکھی سروس

ایک جاپانی ریسٹورنٹ نے گاہکوں کو اسنیکس پیش کرنے سے قبل چہرے پر تھپڑ مارنے کی انوکھی سروس متعارف کروائی ہے۔ 

وسطی جاپان میں واقع شہر نگویا میں شاچی ہوکویا ازاکایا نامی بار میں آنے والے گاہکوں کو کھانے پینے کی اشیاء فراہم کرنے سے قبل بار کی خواتین اسٹاف گاہک کے چہرے پر تھپڑ رسید کرتی ہیں۔ 

بتایا جاتا ہے کہ اس عجیب و غریب اور متنازع سروس کی وجہ سے اس بار کے کاروبار میں کافی اضافہ ہوا ہے اور یہاں آنے والوں میں بیشتر اس تکلیف دہ تجربے کو آزمانے کے خواہشمند ہوتے ہیں۔

شروع شروع میں تو یہ سروس شاچی ہوکویا ازاکایا بار کی صرف ایک خاتون اسٹاف ممبر گاہک کی فرمائش پر فراہم کرتی تھی، لیکن اس کی ڈیمانڈ بڑھنے پر منیجمنٹ نے تھپڑ مارنے والی متعدد لڑکیوں کی خدمات حاصل کرلیں۔ یہاں تک کہ ایک تھپڑ کے 100 ین (90 سینٹ) وصول کیے جانے لگے۔ 

چینی زبان کی ایک میڈیا پبلیکیشن کے مطابق ایک موقع پر لوگوں سے 500 ین تک اس بات کے چارج کیے جانے لگے کہ کونسی لڑکی تھپڑ مارے گی۔

یہ سروس جاپانی مرد و خواتین سمیت متجسس غیر ملکی سیاحوں میں بھی کافی مقبول ہے۔

مذکورہ میڈیا ادارے کے مطابق جتنی زور سے تھپڑ اتنا ہی زیادہ گاہک خوش ہوتا ہے بلکہ ریلیکس محسوس کرکے خاتون سے اظہار تشکر بھی کرتے ہیں۔ گو کہ یہ متنازع سلسلہ ختم ہوچکا لیکن اب بھی اس سے کافی لوگ متاثر ہیں۔



اپنی رائے کا اظہار کریں