مواقع ڈھونڈنے کے بجائے ہمیشہ خوش رہنے کیلئے یہ 6 ٹپس آزمائیں

---فائل فوٹو
—فائل فوٹو 

خوش رہنا ہر کسی کا حق ہے اور خوش رہنے سے ناصرف ذہنی صحت سمیت مجموعی جسمانی صحت بہتر ہوتی ہے بلکہ سماجی تعلقات میں بھی بہتری آتی ہے۔

اپنے ارد گرد نظر دہرائیں، آپ کو محسوس ہوگا کہ خوش لوگ ہی کامیاب لوگ ہوتے اور مزید کامیابیاں بھی سمیٹتے چلے جاتے ہیں۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ جب ہم ذہنی اور جسمانی طور پر پرسکون، مثبت اور خوش ہوتے ہیں تو قدرتی طور پر ہمارے ارد گرد ہمیں سب اچھا محسوس ہوتا ہے اور اس کے برعکس ناخوش انسان بیماریوں میں اور پریشانیوں میں گھرا رہتا ہے جس کے نیتجے میں ذہنی صحت بھی خراب ہوتی ہے۔

جب ہم کوئی ایسا کام کرتے ہیں جس سے ہمارے ذہنی سکون میں اضافہ ہوتا ہے تو دماغ میں ایک کیمیکل پیدا ہوتا ہے جسے ڈوپا مائن کہتے ہیں، اس کیمیکل کو خوشی کا احساس بڑھانے کے لیے ذمہ دار قرار دیا جاتا ہے۔

طبی ماہرین کی جانب سے تجویز کیا جاتا ہے کہ روز مرہ کی روٹین میں چند عادات اپنا کر ڈوپا مائن کی افزائش میں اضافہ کیا جا سکتا ہے جس سے ہر روز منفی سوچ سے دور رہتے ہوئے خوشی سے زندگی گزاری جا سکتی ہے۔

خوش رہنے کے لیے 7 آزمودہ طریقے جو نہایت مؤثر ثابت ہو سکتے ہیں:

متوازن غذا کا استعمال

ہم سب جانتے ہیں کہ مجموعی صحت میں بہتری اور وزن میں کمی لانے کے لیے متوازن غذا کا استعمال بے حد ضروری ہے، متوازن غذا جیسے کہ پروٹین، فائبر، وٹامنز، منرلز اور کاربوہائیڈریٹس پر مبنی غذا یعنی کہ پھلوں، سبزیوں، دالوں اور ڈیری پروڈکٹس کے مجموعے کا نام ہے۔

طبی تحقیق کے مطابق ایسی غذا، جس میں پھل، سبزیاں، کم فیٹ، اور صحت مند پروٹین شامل ہوں جسم کو انرجی فراہم کرنے کا بہترین ذریعہ سمجھی جاتی ہے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ تھکاوٹ یا کمزوری کے شکار افراد کو اداسی اور مایوسی کا احساس ہونے لگتا ہے اس لیے خوش رہنے کے لیے جسم کو انرجی فراہم کرنا انتہائی ضروری ہے۔

مسکرائیں

مسکرانے سے خوشی میں اضافہ ہوتا ہے، جب ہم مسکراتے ہیں تو دماغ میں ایسے کیمیکلز افزائش پاتے ہیں خوشی میں اضافے کا سبب بنتے ہیں تاہم خوشی حاصل کرنے کا ایک بہترین طریقہ یہ بھی ہے کہ آپ اپنے دن کا آغاز صبح شیشے کے سامنے کھڑے ہو کر مسکرانے سے کریں۔

ورزش کریں

طبی تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ باقاعدگی کے ساتھ ورزش کرنا جسم میں ایسے کیمیکلز کی مقدار میں اضافہ کرتی  ہے جو خوشی کی احساس میں اضافے کا سبب بنتے ہیں۔ 

یونیورسٹی آف ٹورنٹو میں ہونے والی ایک طبی تحقیق کے مطابق جسمانی سرگرمیاں ڈپریشن کو دور رکھنے میں مدد فراہم کرتی ہیں۔

ملنے والوں کو شکریہ ادا کریں

کسی کا بھی شکریہ ادا کرنے سے آپ اپنی خوشی میں اضافہ کر سکتے ہیں، طبی تحقیق کے مطابق لوگوں کا شکریہ ادا کرنے سے امید اور خوشی کے احساس میں اضافہ ہوا ہے اور اگر آپ دیر پا خوشی چاہتے ہیں تو لوگوں کا شکریہ ادا کرنا شروع کر دیں۔ 

مثال کے طورپر جب کوئی آپ کو آفس میں چائے یا کافی آفر کرے تو اس کا شکریہ ضرور ادا کریں۔

معیاری اور پرسکون نیند لیں

مصروف زندگی نے سات سے آٹھ گھنٹے کی نیند لینے کے عمل کو مشکل بنا دیا ہے جبکہ نیند کے مسائل میں بھی اضافہ ہوا ہے جبکہ صحت کو برقرار رکھنے کے لیے بھرپور نیند سونا بے حد ضروری ہے۔

نیند کا معیار بہتر بنانے سے ناصرف خوشی کے احساس میں اضافہ ہوتا ہے بلکہ مجموعی صحت میں بھی بہتری آنا شروع ہوتی ہے۔ 

منفی سوچ سے خود کو دور رکھنے کی کوشش کریں

زیادہ تر انسانوں کو زندگی میں پیش آنے والی مشکلات یا واقعات کی وجہ سے منفی سوچ کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور وہ مایوسی کا شکار ہو جاتے ہیں، اس منفی سوچ کی وجہ سے بعض اوقات شدید دماغی مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

خوش رہنے کے لیے یہ ضروری ہے کہ جلد سے جلد منفی خیالات سے نجات حاصل کریں۔ 

منفی خیالات سے چھٹکارا پانے کے لیے اپنے خاندان کے لوگوں یا دوستوں کے ساتھ وقت گزاریں یا کوئی فلم دیکھیں۔



اپنی رائے کا اظہار کریں