اسرائیلی کھلاڑی سے ہاتھ ملانے پر ایران نے ویٹ لفٹر پر تاحیات پابندی لگادی

فوٹو،اسکرین گریب
فوٹو،اسکرین گریب

اسرائیلی کھلاڑی سے ہاتھ ملانے پر ایران نے اپنے ویٹ لفٹر پر ہر قسم کے کھیلوں کے لیے تاحیات پابندی لگادی۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق اس واقعے پر کھیلوں کی کمیٹی کو بھی ختم کردیا گیا ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق تجربہ کار ویٹ لفٹر مصطفیٰ راجائی پولینڈ میں ہونے والی ورلڈ ماسٹر ویٹ لفٹنگ چیمپئن شپ کی کیٹیگری میں دوسرے نمبر پر رہے تھے جہاں ہفتے کو پوڈیم پر انہوں نے ایرانی پرچم بھی اپنے جسم پر لپیٹا ہوا تھا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق اس موقع پر پوڈیم پر تیسری پوزیشن حاصل کرنے والا اسرائیلی کھلاڑی بھی کھڑا تھا۔

رپورٹس کے مطابق اس دوران دونوں کھلاڑیوں نے مصافحہ کیا اور ایک ساتھ تصویر کھنچوائی جس کی وجہ سے ایران کی ویٹ لفٹنگ فیڈریشن نے راجائی پر تاحیات پابندی عائد کردی اور ان کے عمل کو ناقابل معافی جرم قرار دیا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق کئی ایرانی کھلاڑی متعدد مقابلوں میں اسرائیلیوں کا سامنا کرنے سے انکار کر چکے ہیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق ایران اسرائیل کو ایک ملک کے طور پر تسلیم نہیں کرتا اور ایرانی اور اسرائیلی کھلاڑیوں کے درمیان کسی بھی قسم کے رابطے سے سختی سے منع کرتا ہے۔



اپنی رائے کا اظہار کریں