اینٹی کرپشن نے پرویز الہٰی کو گرفتار کرنے کی وجہ بتادی

فائل فوٹو
فائل فوٹو

سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی کی گرفتاری پر اینٹی کرپشن کی جانب سے بیان جاری کردیا گیا۔

ترجمان اینٹی کرپشن کے مطابق پرویز الہٰی کو لاہور ماسٹر پلان کرپشن کیس میں راولپنڈی سے گرفتار کیا گیا۔

ترجمان کے مطابق پرویز الہٰی نے لاہور ماسٹر پلان منصوبے میں مالی فوائد کے لیے جعلسازی کی، انہوں نے ماسٹر پلان میں رد و بدل کر کے اپنی زمینیں لاہور میں شامل کرنے کی کوشش کی۔

ترجمان اینٹی کرپشن کے مطابق ماسٹر پلان میں رد و بدل کے لیے کنسلٹنٹ فرم کی جعلی مہریں اور مونوگرام استعمال ہوا، کنسلٹنٹ کے ترتیب دیے گئے ماسٹر پلان میں جعلی کاغذات کا اضافہ کیا گیا، زرعی زمین کو کمرشل اور رہائشی میں تبدیل کر کے اربوں روپے کا فائدہ اٹھانے کی کوشش کی گئی۔

ترجمان کا مطابق پرویز الہٰی نے مالی مفاد کے لیے عہدے اور دفتر کا ناجائز استعمال کیا، انہوں نے اختیارات کا ناجائز استعمال کر کے متعلقہ افسران سے منصوبے کی منظوری کرائی۔

ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ پرویز الہٰی کے خلاف لاہور ماسٹر پلان میں جعلسازی پر اینٹی کرپشن لاہور میں مقدمہ درج ہے، کرپشن کیس میں ملوث تمام ملزمان کو گرفتار کیا جائے گا۔



اپنی رائے کا اظہار کریں