پریکٹس اینڈ پروسیجرل ایکٹ پر بینچز بنانے سے متعلق حکم امتناع ختم، پانچ بینچ تشکیل

پریکٹس اینڈ پروسیجرل ایکٹ پر بینچز بنانے سے متعلق حکم امتناع ختم، پانچ بینچ تشکیل

سپریم کورٹ نے پریکٹس اینڈ پروسیجرل ایکٹ پر بینچز بنانے سے متعلق حکم امتناع ختم کردیا۔ چیف جسٹس نے پانچ بینچ تشکیل دے دیے۔

پریکٹس اینڈ پروسیجرل ایکٹ کے مطابق چیف جسٹس دو سینئر ججز سے مشاورت کر کے بینچ تشکیل دیں گے جبکہ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجرل ایکٹ میں شامل دیگر معاملات پر سماعت جاری رہے گی۔

چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے رواں ہفتے کا ججز روسٹر جاری کردیا، روسٹر چیف جسٹس سمیت دو سینئر ججز کی مشاورت سے جاری کیا گیا۔

چیف جسٹس اور دو سینئر ججز نے پانچ بینچ تشکیل دے دیے۔ 

بینچ نمبر ایک میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس قاضی فائز عیسیٰ، جسٹس امین الدین اور جسٹس اطہر من اللّٰہ شامل ہیں۔ 

بینچ نمبر 2 میں جسٹس سردار طارق اور جسٹس مسرت ہلالی اور بینچ نمبر 3 میں جسٹس اعجازالاحسن، جسٹس منیب اختر اور جسٹس شاہد وحید شامل ہیں۔ 

بینچ نمبر 4 میں جسٹس یحییٰ آفریدی، جسٹس مظاہر اکبر نقوی اور جسٹس محمد علی مظہر شامل ہیں جبکہ بینچ نمبر 5 جسٹس جمال خان مندوخیل، جسٹس عائشہ ملک اور جسٹس حسن اظہر رضوی پر مشتمل ہے۔



اپنی رائے کا اظہار کریں