ادرک سوڈا صحت کے لیے کیسا ہے؟

---فائل فوٹو
—فائل فوٹو 

بے شک ادرک صحت کے لیے بے شمار فوائد کی حامل ہے مگر اس کا یہ مطلب ہر گز نہیں ہے کہ اس سے بننے والے میٹھے مشروبات بھی صحت کے لیے اتنے ہی مفید ہوں گے۔

ادرک ایک جڑی بوٹی ہے جس پر کئی بار تحقیق کی جا چکی ہے، ادرک سپر فوڈ کے زمرے میں بھی آتی ہے، یہ متلی، سر درد،جسمانی درد اور سوجن دور کرنے سے لے کر خون میں شکر کے توازن کو بہتر بنانے تک مفید قرار دی جاتی ہے۔

اس طرح کے فوائد کے سبب کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ ادرک سے بننے والے مشروبات خصوصاً جنجر سوڈا بھی (ادرک سوڈا ) صحت کے لیے اتنا ہی مددگار اور صحت مند ثابت ہوگا جتنی کہ خود ادرک ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق ادرک سے بننے والے مشروبات اور ادرک سوڈا صحت کے لیے نقصان دہ ہو ثابت سکتے ہیں، کیوں کہ ادرک ایک ترش اور کڑوی جڑی بوٹی ہے اسی لیے اس سے بننے والے مشروبات میں اس کے ترش ذائقے کو کم کرنے اور اِنہیں لذیذ بنانے کے لیے بے تحاشہ شکر کا استعمال کیا جاتا ہے۔

ماہرین کے مطابق بہت سے افراد ادرک کا سوڈا پینا بے حد پسند کرتے ہیں جبکہ یہ صحت کے لیے مفید نہیں بلکہ نہایت مضر ہے۔

ادرک سوڈا کیا ہے؟

ادرک، جنجر سوڈا ایک کاربونیٹڈ سافٹ ڈرنک مشروب ہے جس میں ادرک کا الگ ذائقہ ہوتا ہے اور اسے چینی یا مصنوعی مٹھاس سے میٹھا کیا جاتا ہے، اس میں عام طور پر پریزرویٹوز، کیریمل کلرنگ اور ہائی فرکٹوز کارن سیرپ بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

 ادرک سے بننے والے سوڈے میں یا تو قدرتی ادرک کا رَس یا پھر ادرک سے بنا سفوف شامل کیا جاتا ہے، جنجر سوڈے میں صرف ادرک ہی قدرتی جز ہوتا ہے جبکہ باقی سب اجزا پروسیسڈ اور مصنوعی ہوتے ہیں جس کے سبب ادرک کے فوائد بھی زائل ہو جاتے ہیں۔

غذائی ماہرین کا کہنا ہے کہ جنجر سوڈے کے ایک 12 اونس کے کین میں تقریباً 36 گرام چینی شامل ہوتی ہے جو کہ 2,000 کیلوریز پر مبنی کسی دوسری خوراک کا تقریباً 3/4 حصہ ہے۔

مزید یہ کہ جنجر سوڈا کو سوڈے کی شکل دینے کے لیے اس میں مصنوعی طور پر کاربن ڈائی آکسائیڈ گیس شامل کر کے کاربونیشن کا عمل مکمل کیا جاتا ہے جو کہ صحت کے لیے سراسر مضر ہے، اسی لیے اگر آپ ادرک سے بنا کاربونیٹڈ والا جنجر سوڈا پی کر یہ سجھ رہے ہیں کہ آپ اپنی صحت کے لیے یہ اچھا کر رہے ہیں تو یہ خیال  غلط ہے۔

غذائی ماہرین کا کہنا ہے کہ جنجر سوڈے میں مصنوعی ذائقہ استعمال کیا جاتا ہے اسی لیے یہ مشروبات بھی کسی دوسرے سوڈے سے زیادہ صحت پر فوائد نہیں رکھتا۔



اپنی رائے کا اظہار کریں