عمران خان نہ ہوتے تو آج میں ’شاہد آفریدی‘ نہ ہوتا، شاہد آفریدی

---فائل فوٹو
—فائل فوٹو 

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ اگر عمران خان نہ ہوتے تو آج میں’شاہد آفریدی‘ بھی نہ ہوتا۔

بوم بوم لالا نے حال ہی میں ایک نجی ٹی وی کے مزاحیہ شو کے لیے انٹرویو دیا ہے، انہوں نے اس دوران خود سے متعلق پوچھے گئے کئی سوالوں کے جواب دیئے۔

سابق کرکٹر  سے شو کے دوران ایک سوال پوچھا گیا کہ ایک کمرے میں ٹی وی پر اننگز چل رہی ہیں، ایک کرکٹر کی اننگ آپ بار بار دیکھیں گے، ایک کھلاڑی کی اننگ ایک بار اور ایک کھلاڑی ایسا جس کی اننگ ٹی وی پر آتے ہی آپ کمرے سے باہر چلے جائیں گے؟

شو کے میزبان واسع چوہدری نے شاہد آفریدی کو سابق کرکٹر جاوید میاں داد، عمران خان اور حالیہ کپتان بابر اعظم کے ناموں کے آپشنز دیئے۔

اس سوال کے جواب میں لالا کا کہنا تھا کہ وہ جاوید بھائی کی اننگ ایک بار ہی دیکھیں گے، عمران خان کی اننگ وہ 2 بار دیکھیں گے کیوں کہ کرکٹ کے حوالے سے وہ اُن کے رول ماڈل رہے ہیں اور انہوں نے کرکٹ بھی عمران خان کی وجہ سے شروع کی تھی، وہ نہ ہوتے تو آج شاہد آفریدی نہ ہوتا۔

شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ آخری آپشن بچا بابر اعظم کا تو وہ بابر کی اننگ نہیں دیکھیں گے۔

شو کے دوران ایک سوال کے جواب میں کرکٹر شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ اگر اُن کی زندگی پر فلم بنی تو وہ چاہیں گے کہ اُن کا کردار اداکار و میزبان فہد مصطفیٰ ادا کریں۔

شاہد آفریدی نے شو کے دوران ناظرین کی جانب سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اُن کے مطابق اس بار ورلڈ کپ پاکستان جیتے گا، کیوں کہ بالنگ بہت بہترین ہے اور پاکستان کے مقابل آسٹریلیا یا پھر انگلینڈ کی ٹیم ہو سکتی ہے۔

شاہد آفریدی کا اپنی فٹنس پر بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ تاحال اپنی فٹنس پر بہت دھیان دیتے ہیں، وہ روزانہ کی بنیاد پر ورزش کرتے ہیں جیسے پہلے کیا کرتے تھے، اگر وہ دو دن ٹریننگ نہ کریں تو وہ خود کو بیمار محسوس کرنے لگتے ہیں۔



اپنی رائے کا اظہار کریں