باب میننڈیز نے سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کی چیئرمین شپ چھوڑ دی

باب میننڈیز نے سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کی چیئرمین شپ چھوڑ دی

امریکی سینیٹر باب میننڈیز نے رشوت کے بدلے مصری حکومت کے لیے کام کرنے کے الزام عائد ہونے پر سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کی چیئرمین شپ عارضی طور پر چھوڑ دی۔

گورنر نیوجرسی فل مرفی اور بعض ڈیموکریٹس نے مطالبہ کیا ہے کہ باب میننڈیز سینیٹر کے عہدے سے بھی استعفی دیں تاکہ شفاف تحقیقات آگے بڑھ سکے۔

واضح رہے کہ سینیٹر باب میننڈیز اور اُن کی بیوی پر اختیارات اور اثر و رسوخ کو غلط استعمال کرنے، بھاری رشوت لینے اور مصر کی حکومت کو فائدہ پہنچانے کے الزامات ہیں۔

دونوں میاں بیوی کے گھر کی تلاشی کے دوران ایک لاکھ ڈالر مالیت کا سونا اور 4 لاکھ 80 ہزار ڈالر نقد رقم برآمد ہوئی تھی۔

سینیٹر میننڈیز کے خلاف 6 سال پہلے بھی کرمنل کیس چلا تھا لیکن جیوری ڈیڈلاک کی وجہ سے وہ مقدمہ خارج ہوگیا تھا۔



اپنی رائے کا اظہار کریں