پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق اوگرا کا ردِ عمل

----فائل فوٹو
—-فائل فوٹو

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کے ترجمان کا کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر قیاس آرائیاں تیل کی سپلائی چین میں خلل ڈال سکتی ہے۔

ایک بیان میں اوگرا کے ترجمان نے کہا ہے کہ اوگرا پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر قیاس آرائیوں سے بچنےکی اہمیت پر زور دیتا ہے۔

ترجمان اوگرا کا کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی قیمتوں اور ڈالر کی شرحِ تبادلہ پر منحصر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ دنوں میں بین الاقوامی سطح پر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ دیکھا گیا، ملک میں ڈالر سے روپے کی شرح تبادلہ میں بہتری آئی ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ نئی قیمتوں کے اعلان میں ابھی ایک ہفتہ باقی ہے، اس مدت میں قیمتوں پر قیاس آرائیاں تیل کی سپلائی چین میں خلل ڈال سکتی ہے۔

واضح رہے کہ وزارتِ خزانہ کے حکام نے کہا تھا کہ روپے کی قدر میں اضافے کے باعث پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے۔

حکام کے مطابق یکم اکتوبر سے آئندہ 15 روز کے لیے پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 11 روپے 98 پیسے جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 9 روپے 17 پیسے تک کمی ہو سکتی ہے، اس کے ساتھ مٹی کے تیل کی قیمت 5 روپے 58 پیسے نیچے آ سکتی ہے۔



اپنی رائے کا اظہار کریں