نواز شریف اقتدار میں آئے تو بیانیہ مفاہمت کا ہی ہوگا، اسحاق ڈار

اسحاق ڈار نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف الیکشن کی تاریخ کیسے دے سکتے ہیں؟
اسحاق ڈار نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف الیکشن کی تاریخ کیسے دے سکتے ہیں؟

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ ہماری کوئی ڈیل نہیں ہوئی، نواز شریف اقتدار میں آئے تو بیانیہ مفاہمت کا ہی ہوگا، نوازشریف نے کہا ہے وہ انتقام کی سیاست نہیں کریں گے۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ آنے والے وقت میں نواز شریف اور آصف زرداری کی ملاقات ہوگی، ذاتی خواہش ہے کہ تمام اہم سیاسی جماعتوں کو مل کرحکومت بنانی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف پاناما کا ڈرامہ رچایا گیا، نواز شریف اس وقت اپنے قانونی معاملات میں مصروف ہیں۔

اسحاق ڈار نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف الیکشن کی تاریخ کیسے دے سکتے ہیں؟ نواز شریف کس حیثیت میں الیکشن کی تاریخ دیں؟ جتنی جلدی الیکشن ہو یہ ہمارے لیے بہتر ہے، الیکشن کمیشن کو صاف اور شفاف انتخابات کروانے ہیں، کسی کا نواز شریف سے گلہ نہیں بنتا کہ ابھی تک الیکشن کی تاریخ کی بات نہیں کی، الیکشن چاہے کل ہوجائیں ہم تیار ہیں۔

رہنما مسلم لیگ (ن) نے کہا کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) حکومت کا مقصد ملک کوڈیفالٹ ہونے سے بچانا تھا، پیپلز پارٹی کے ساتھ اچھا ورکنگ ریلیشن شپ رہا ہے، خورشید شاہ یا دیگر لوگ جو کہہ رہے ہیں کہ ان کی باتوں کا جواب نہیں دوں گا۔

اسحاق ڈار نے مزید کہا کہ بے نظیر بھٹو جب 2007 میں آئیں تو ان کی اپیل ہائیکورٹ میں تھیں، انہوں نے عدالت میں حفاظتی ضمانت کے لیے نہیں حتمی ضمانت کے لیے درخواست دی تھی۔

سابق وزیر خزانہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ شاہد خاقان عباسی شاید ذاتی مجبوری کی وجہ سے نواز شریف کے استقبال کے لیے نہیں آ سکے، شاہد خاقان عباسی پارٹی کے سینئر نائب صدر ہیں انہوں نے استعفیٰ نہیں دیا۔



اپنی رائے کا اظہار کریں